جیسا کہ ہمیں معلوم ہے کہ کافر جہنمی ہیں لیکن پاگل کافر یا کافر بچہ کا اگر انتقال ہو جائے تو کیا معاملہ ہوگا؟


اگر کوئی شخص ساری زندگی مجنون رہا اور اس وجہ سے اسلام قبول نہیں کیا اور اسی طرح کفار کے نابالغ بچوں کے بارے میں امام ابو حنیفہ رحمۃ اللہ علیہ کا مسلک یہ ہے کہ ان کے بارے میں توقف کیا جائے۔

وقدوردت فیھم اخبار ’’متعارضہ‘‘ فالسبیل تفویض امر ھم الی اللہ تعالیٰ .... الخ (شامی ص ۹۲، ج ۲)"